Pakistan will face India in the Asian Lacrosse Games

پاکستان ایشیائی لیکروس گیمز میں بھارت سے ٹکرائے گا

ایبٹ آباد میں تیاری کے مراحل اور ٹرینگ کے بعد پاکستان ایشیائی لیکروس گیمز میں 2 جولائی کو بھارت سے ٹکرائے گا
اسلام آباد، پاکستان تیار ہو جائیں ایک عظیم مقابلے کے لیے کیونکہ پاکستان سمرقند، ازبیکستان میں ہونے والے ایشیائی لیکروس گیمز میں اپنے حریف بھارت سے مقابلے کے لیے تیار ہے! یہ دلچسپ ٹورنامنٹ 1 جولائی سے شروع ہو کر 4 جولائی 2024 تک جاری رہے گا۔
پاکستان بھر میں لیکروس کے شائقین جوش و خروش سے بھرے ہوئے ہیں کیونکہ قومی ٹیم 2 جولائی کو بھارت کے خلاف ایک زبردست مقابلے کے لیے تیار ہے۔ یہ انتہائی متوقع میچ کھیل میں جنگی جذبے اور حکمت عملی کی شاندار نمائش کا وعدہ کرتا ہے کیونکہ دونوں ٹیمیں علاقائی برتری کے لیے جدوجہد کریں گی۔
ایشیائی گیمز میں پاکستان کا لیکروس سفر کچھ اس طرح ہے:
2 جولائی: پاکستان کا لیکروس بمقابلہ بھارت کا لیکروس
3 جولائی: پاکستان خواتین کا لیکروس بمقابلہ سعودی عرب خواتین کا لیکروس
3 جولائی: پاکستان کا لیکروس بمقابلہ ایران کا لیکروس
4 جولائی: پاکستان کا لیکروس بمقابلہ ازبیکستان کا لیکروس
سیکریٹری جنرل پاکستان لیکروس فیڈریشن طیفور زرین نیے میڈیا کو بتایا کہپاکستان لیکروس فیڈریشن (PLF) نے دو ٹریننگ کیمپ منعقدکیے ہوے ہیں ایک مردان اور جبکہ دوسرا کوئٹہ میں شروع ہے جس میں 30 وومن کھلاڑی حصہ لے رہی ہے۔ حتمی انتخاب کا عمل 15 جون 2024 کو ہو گا، جس میں یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ کون سے کھلاڑی بین الاقوامی سطح پر پاکستان کی نمائندگی کریں گے۔
ایشیائی لیکروس فیڈریشن کی طرف سے ایشیا پیسیفک لیکروس یونین کے تعاون سے منعقد ہونے والے ایشیائی لیکروس گیمز ایشیا میں لیکروس کا سب سے بڑا ایونٹ ہے۔ اس سال کے مقابلے میں پورے براعظم کے باصلاحیت ترین کھلاڑیوں کو پیش کرنے کا وعدہ
کیا گیا ہے، جو شائقین اور کھلاڑیوں کے لیے ایک ناقابل فراموش نظارہ پیش کرے گا۔ پاکستان کے کھلاڑی دنیائے لیکروس میں اپنا لوہا منوانے کے لئے تیار ہے۔

Law on Protection of Journalists; Conducting seminars

صحافیوں کے تحفظ کا قانون; سیمینار کا انعقاد

ایبٹ آباد.پاکستان پریس فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام صحافیوں کے تحفظ کا قانون پروٹیکشن آف جرنلسٹس ایکٹ کے کمیشن کی تشکیل کو یقینی بنانے کے لئے سیمینار کا انعقاد کیا گیا ۔جس میں سیاسی وسماجی شخصیات ،پولیس افسران، ڈسٹرکٹ وہائیکورٹ بار کے نمائندوں، سول سوسائٹیز، انسانی حقوق کی تنظیم کے نمائندوں اور صحافی تنظیموں کے عہدیداران شریک تھے۔ سیمینار میں پاکستان پریس فاؤنڈیشن کے ٹرینر لالہ حسن، آرگنائزر نوید اکرم عباسی نے شرکاء کو جرنلسٹس پروٹیکشن ایکٹ کی منظوری کے بعد شکایات کے ازالہ کے لئے کمیشن کے قیام کے لئے مشترکہ کوششوں کے لئے بریفنگ دی۔ سیمینار میں رکن خیبر پختونخوا اسمبلی آمنہ سردار، ایس پی انوسٹی گیشن اشتیاق خان، جماعت اسلامی کے سابق امیدوار صوبائی اسمبلی عبدالرزاق عباسی ،تحریک انصاف کی رہنما ارم یاسر عباسی، ہائیکورٹ بار کی انعم جہانگیر ایڈووکیٹ ،بیرسٹر ہاشم اقبال جدون، انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والے ادریس اعوان ایڈووکیٹ، سماجی تنظیم شہری اتحاد کامران احمد ایڈووکیٹ ،صدر ایبٹ آباد پریس کلب محمد شاہد چوہدری، جنرل سیکرٹری سردار شفیق احمد، جنرل سیکرٹری اے یو جے عاطف قیوم، سینئر صحافی سردار نوید عالم، محمد عامر شہزاد جدون، طاہر محمود اعوان ،کامسیٹس یونیورسٹی ایبٹ آباد کیمپس کی طالبات نیلوفر شوکت ،سندس نے اظہار خیال کیا۔ اس موقع پرجرنلسٹس پروٹیکشن ایکٹ 2021 پر تفصیلی گفتگو کی گئی اور شکایات کے ازالہ کے لئے کمیشن کے قیام کے لئے قانونی جدوجہد اور تحریک کے آغاز کے لئے بھی تجویز دی گئی جب کہ وکلاء نے کمیشن کی فوری تشکیل کے لئے ہائیکورٹ میں بھی رٹ دائر کرنے کے لئے مکمل قانونی معاونت کی یقین دہانی کرائی گئی۔سیمینار میں رکن صوبائی اسمبلی آمنہ سردار نے اسمبلی کے پلیٹ فارم پر بھی آواز بلند کی یقین دلایا ۔

Naegleria and Measles

خسرے اور نگلیریا سے آگاہی پھیلانے کی ہدایت

 محکمہ صحت خیبرپختونخوا نے خسرہ اور نگلیریا سے متعلق ایڈوائزری جاری کردی گئی۔ ایڈوائزری خسرہ اور نیگلیریا کی روک تھام کیلیے متعلقہ اداروں کو جاری کی گئی ہے۔ پبلک ہیلتھ پروفشنلز کو خسرے اور نگلیریا سے آگاہی پھیلانے کی ہدایت کی گئی۔ خسرے کے ٹیکوں سے رہنے والے15 سال سے کم عمر بچے انفیکشن کا شکار ہو سکتے ہیں۔ نگلیریا سے بچنے کیلیے تیراکی اور غوطہ خوری کے دوران ناک میں پانی ڈالنے سے گریز کریں۔پانی کی ٹینکیاں،سوئمنگ پولز کلورین سے صاف کیے جائیں۔ محکمہ صحت کے تمام متعلقہ اداروں کو خسرے اور نگلیریا کے مشتبہ کیسوں کی نگرانی کرنے کی ہدایت کی گئی۔

Tax-on-Marriage-halls

شادی ہالوں کو فیکسڈ ٹیکس ریجیم کا انتخاب کرنے کے لیے 25 جون کی ڈیڈ لائن

کیپرا نے شادی ہالوں کو فیکسڈ ٹیکس ریجیم کا انتخاب کرنے کے لیے 25 جون کی ڈیڈ لائن دے دی گئی۔ خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی نے صوبہ بھر میں شادی ہالوں کی سروسز سے وابستہ کاروباری افراد اور اداروں کو سیلز ٹیکس آن سروسز کے فیکسڈ ریجیم اور پرسنٹیج ریجیم میں سے کسی ایک کے انتخاب کیلئے 25 جون 2024 کی تاریخ مقرر کرلی۔ کیپرا کے میڈیا وینگ سے جاری کردہ ایک علامیے کے مطابق 25 جون سے پہلے شادی ہالوں کے مالکان یا انتظامیہ کو دونوں ریجیمز میں سے ایک کا انتخاب کرنا ہوگا بصورت دیگر ان سے 11 فیصد جرمانہ وصول کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے رواں مالی سال میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ صوبہ بھر کےشادی ہالز کے مالکان اور انتظامیہ کی سہولت اور آسانی کے لیے اس سیکٹر میں پرسنٹیج ریجیم کے ساتھ ساتھ ایک فیکسڈ ٹیکس ریجیم کا آغاز کیا جائے جس کے لیے صوبے بھر کےشادی ہالوں کو تین کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا ہے۔ شادی ہالوں کے مالکان یا انتظامیہ کو دونوں ریجیمز میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہوگا جس کے بعد اس شادی ہال سے اپنے متنخب شدہ ریجیم کے مطابق ٹیکس وصول کیا جائے گا۔ پرسنٹیج ریجیم جو کہ پہلے سے عمل ہے اس میں شادی ہال پر 10 فیصد ٹیکس لاگو ہے۔

فیکسڈ ریجیم کے لئےشادی ہالوں کو ان کے سائز کی بنیاد پر تین کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا ہے اور تینوں کیٹگریز پر 25، ہزار 15 ہزار اور 10 ہزار روپے فی پروگرام ٹیکس مقرر کیا گیا ہے جو کہ ہر متعلقہ شادی ہال سروسز حاصل کرنے والوں سے وصول کرکے کیپرا کے اکاؤنٹ میں جمع کرے گا۔ اس سسٹم کے اجراء کا بنیادی مقصد شادی ہال کی انتظامیہ کے لئے آسانیاں پیدا کرنا تھا اس کے ساتھ ساتھ اس سسٹم سے نظام میں شفافیت آئے گی اور کیپرا کی جانب سے شادی ہالوں کے اڈٹ میں بھی کمی ائے گی اور کیپرا کے اہلکاروں کو شادی ہالوں کے دورے کرنے کی ضرورت بھی نہیں پڑے گی۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے شادی ہال پر 10 فیصد ٹیکس نافذ ہے جو کہ پرسنٹیج ریجیم کے مقابلے میں کافی زیادہ ہے۔ فیکسڈ ریجیم میں شامل ہونے کے لیے شادی ہال کے انتظامیہ کو خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی کی ویب سائٹ پر جا کر ایک اقرار نامہ جمع کرنا ھوگا اور فیکسڈ ریجیم کا انتخاب کرنا ہوگا۔ اقرار نامے کا ایک خاکہ کیپرا کی ویب سائٹ پر موجود ہے۔ 25 جون سے پہلے دونوں ریجیمز میں سے کسی ایک کا انتخاب نہ کرنے والوں کو جرمانے کے طور پر 11 فیصد ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔ لہذا خیبر پختونخوا میں کام کرنے والے وہ کاروباری افراد اور ادارے جو کہ شادی ہال کے سیکٹر سے وابستہ ہیں ان کو چاہیے کہ وہ 25 جون 2024 سے پہلے خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی کی ویب سائٹ پر جا کر فکس ریجیم اور پرسنٹیج ریجیم میں سے کسی ایک کا انتخاب کر لیں۔ واضح رہے کہ فیکسڈ ٹیکس ریجیم یکم جولائی 2024 سے نافذ العمل ہوگا۔

اقرار نامے کے لیے دئیے گئے لنک کو استعمال کریں۔

KPRA TAX Form

Exemption on import of luxury electric vehicles

لگژری الیکٹرک گاڑیوں کی درآمد پر رعایت ختم

وفاقی بجٹ 25- 2024 میں لگژری الیکٹرک گاڑیوں کی درآمد پر دی جانے والی رعایت کا خاتمہ کردیا گیا۔ وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے بجٹ تقریر کے دوران بتایا کہ لگژری الیکٹرک گاڑیوں کی درآمد پر دی جانے والی رعایت واپس لی جا رہی ہے۔ محمد اورنگزیب نے کہا کہ 50 ہزار ڈالر سے زائد کی گاڑیاں درآمد کرنے کی استطاعت والے ٹیکس اور ڈیوٹیز دے سکتے ہیں۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ شیشے کی مصنوعات پر درآمدی ڈیوٹی پر چھوٹ کا خاتمہ بھی کیا جارہا ہے۔ محمد اورنگزیب نے کہا کہ شیشے کی مصنوعات کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹیز میں رعایتوں پر چھوٹ ختم کی جا رہی ہے۔

ٹیکس پالیسی کے اہم اُصول
وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ اس سال کی ٹیکس پالیسی کے اہم اُصول یہ ہیں:

• ٹیکس بیس وسیع کرکے ٹیکس ٹو جی ڈی پی تناسب میں اضافہ کرنا۔
• غیر دستاویزی کاروبار کوختم کرنے کیلئے معیشت کی ڈیجیٹائزیشن کرنا اور پروگریسیو ٹیکس سسٹم کے تحت زیادہ آمدن والوں پر زیادہ ٹیکس کا نفاذ کیا جائے گا۔
• نان فائلرز کیلئے کاروباری ٹرانزیکشن کے ٹیکس میں نمایاں اضافہ کیا جائے گا۔

Khyber Pakhtunkhwa: Another new series of rains and strong winds is likely to start

شمالی وزیرستان کے متاثرین کیلئے 35 کروڑ کی مالی امداد جاری کردی گئی

پی ڈی ایم اے خیبر پختونخوا نے شمالی وزیرستان کے متاثرین کیلئے 35 کروڑ کے قریب ماہوار مالی امداد کی قسط جاری کردی۔ پراونشل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی( پی ڈی ایم اے) خیبر پختونخوا نے شمالی وزیرستان کے آپریشن ضرب عضب کے متاثرین کیلئے ماہوار مالی امداد کی مد میں 35 کروڑ کے قریب فنڈز ریلیز کردئیے جو کہ آئندہ 24 گھنٹوں کے اندر اندر تمام رجسٹرڈ متاثرین کو حسب معمول سم کارڈ میسیجنگ کے ذریعے سے موصول ہونا شروع ہو جائینگے ۔ پی ڈی ایم اے کے ڈائریکٹر ثوبیہ حسام طورو نے اس حوالے سے جاری کردہ بیان میں واضح کیا کہ حالیہ ریلیز شدہ فنڈز ماہوار نقد مالی امداد اور راشن الاؤنس کے طور پر 17 ہزار 200 کے قریب خاندانوں کو دئے جا رہے ہیں جن کی ابھی تک اپنے علاقے میں واپسی نہیں ہوئی ہے۔ ثوبیہ حسام طورو نے مزید بتایا کہ ان متاثرین خاندانوں میں وہ خاندان بھی شامل ہیں جو افغانستان کے علاقے خوست سے کچھ عرصہ قبل واپس آئے ہیں ۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پی ڈی ایم اے حتیٰ الوسع کوشش کر رہی ہے کہ متاثرین کو ماہوار مالی امداد کی بروقت ادائیگی کو ہر صورت یقینی بنایا جائے تاکہ ان کی مالی مشکلات کو کم سے کم کیا جا سکے۔

Shandur Polo Festival will begin as scheduled on Friday, June 28

شندور پولو فیسٹیول جمعہ 28 جون کو شیڈول کے مطابق شروع ہوگا

شندور پولو فیسٹیول جمعہ 28 جون کو شیڈول کے مطابق شروع ہوگا، بختیار خان

مشیر سیاحت کی ہدایات کی روشنی میں تین روزہ فیسٹیول کی تیاریوں کو حتمی شکل دیدی گئی ہے، ضلعی انتظامیہ کے اعلی حکام موقع پر انتظامات کا مسلسل جائزہ لے رہے ہیں. ڈی سی اپر چترال نے مقامی سطح پر عیدالاضحی کی چھٹیاں منسوخ کر دی ہیں، مقامی لوگوں سے بھی مسلسل رابطوں میں ہیں. فیسٹیول میں پولو میچز کے علاؤہ چترال اور گلگت بلتستان کی لوک دھنوں پر مبنی محفل موسیقی بھی منعقد ہوگی، سیکرٹری محکمہ سیاحت و ثقافت مشیر سیاحت کا انتظامات پر اطمینان کا اظہار، عیدالاضحی کے فوراً بعد محکمہ سیاحت کی انتظامی ٹیمیں شندور بھیجنے کی ہدایت دی گئی۔ سیکرٹری محکمہ سیاحت و ثقافت خیبرپختونخوا محمد بختیار خان نے کہا ہے کہ مشیر سیاحت و ثقافت زاہد چن زیب کی ہدایات کی روشنی میں شندور پولو فیسٹیول کے تمام انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی ہے جو وزیراعلی کی اعلان کردہ تاریخ یعنی جمعہ 28 جون کو شروع ہو گا۔ اس تین روزہ فیسٹیول میں شرکت کیلئے پاکستان کے علاؤہ دنیا بھر سے سیاحوں کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ سیاحت و ثقافت پشاور کے کانفرنس روم میں منعقدہ جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ سیکرٹری محکمہ سیاحت کا کہنا تھا کہ ڈپٹی کمشنر اپر چترال سمیت چترال کے دونوں اضلاع کی انتظامیہ کے اعلی حکام شاہراہِوں اور سیکورٹی انتظامات کا بذات خود مسلسل جائزہ لے رہے ہیں جبکہ ڈپٹی کمشنر اپر چترال نے مقامی سطح پر ملازمین کی چھٹیاں بھی منسوخ کر دی ہیں اور مقامی لوگوں اور زعماء سے بھی مسلسل رابطوں میں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ عیدالاضحیٰ کے فوراً بعد محکمہ سیاحت و ثقافت کی مختلف انتظامی ٹیمیں شندور پولو فیسٹیول کیلئے روانہ کر دی جائینگی تاکہ شندور گراؤنڈ پر تیاریوں کو نہ صرف فول پروف بنا کر حتمی شکل دی جائے بلکہ مزید بہترین انتظامات بھی کئے جائیں اور جہاں جہاں ضرورت ہو وہاں سیاحوں کیلئے اضافی سہولیات بھی مہیا کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلی علی امین گنڈاپور کی طرف سے اعلان شدہ تاریخوں پر ہی شندور پولو فیسٹیول کا انعقاد کیا جائے گا۔ تین روزہ فیسٹیول میں چترال اور گلگت بلتستان کی پولو ٹیموں کے سنسنی خیز مقابلوں کے علاؤہ ان علاقوں کے فنکار اور گلوکار مقامی دھنوں پر محفل موسیقی میں پرفارم کرینگے۔ فیسٹیول میں ہر سال کی طرح امسال بھی مقامی ثقافتی دستکاریوں اور مصنوعات کے سٹالز سجائے جائینگے۔ فیسٹیول کی اختتامی تقریب 30 جون کو شندور پولو گراؤنڈ پر منعقد ہوگی جس میں رنگا رنگ ثقافتی پروگراموں اور فنکاروں کی پرفارمنس کے علاؤہ پیرا گلائڈنگ اور دیگر فن کے مظاہرے بھی پیش کئے جائینگے۔ درایں اثناء مشیر سیاحت و ثقافت زاہد چن زیب نے شندور پولو فیسٹیول کے سلسلے میں جاری انتظامات اور تیاریوں پر اطمینان کا اظہار کیا ہے جو ڈویژنل اور ضلعی انتظامیہ سے مسلسل رابطوں میں ہیں۔ مشیر سیاحت نے اس سلسلے میں چترال کے دونوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کی مسلسل نگرانی اور کوششوں کو سراہا ہے۔ انہوں نے عیدالاضحی کے فوراً بعد محکمہ سیاحت کے اعلیٰ انتظامی افسران کی ٹیمیں شندور بھیجنے اور تمام انتظامات کو ہر لحاظ سے فول پروف بنانے کی ہدایت کی۔
انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس تین روزہ فیسٹیول کو عالمی معیار کے مطابق ہر لحاظ سے کامیاب اور یادگار ترین سیاحتی میلہ بنایا جائے گا جس کی گونج بین الاقوامی سطح پر سنائی دے گی۔

chairman state life shoaib javed with governor KP faisal karim kundi

گورنر خیبرپختونخوا سے چیئرمین اسٹیٹ لائف کارپوریشن کی ملاقات

گورنر خیبرپختونخوا فیصل کریم کنڈی سے چیئرمین اسٹیٹ لائف کارپوریشن شعیب جاوید حسین نے گورنر ہاؤس پشاور میں ملاقات کی ۔ ملاقات میں خیبر پختونخوا میں اسٹیٹ لائف کی سہولیات کا دائرہ کار بڑھانے کے حوالہ سے بات چیت کی گئی۔ گورنر خیبر پختونخوا فیصل کریم کنڈی کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کے باسیوں کی معاشی آسودگی اور محرومیوں کا ازالہ ترجیحات میں شامل ہے انہوں نے ڈیرہ اسماعیل خان میں اسٹیٹ لائف ہیلتھ زون کے قیام اور تکافل زون کو مزید مستحکم کرنے کے حوالہ سے پیش رفت تیز کرنے کی ہدایات جاری کیں۔

ملاقات میں خیبرپختونخوا کے لیئے ایس او ایس ویلیج منصوبہ پر بھی غور کیا گیا اس حوالے سے گورنر ہاؤس بھرپور تعاون فراہم کرے گا۔ اس موقع پر کے پی میں بی آئی ایس پی کے مستحقین کی ہیلتھ انشورنس اور ڈیتھ کلیم ۔ کینسر اور دیگر موذی اور مہنگے علاج کا پائیلٹ منصوبہ خیبر پختونخوا سے شروع کرنے کی تجویز پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ گورنر خیبر پختونخوا نے کہا کہ صوبہ بھر کی یونیورسٹیوں کو پنشن کی ادائیگی میں شدید مشکلات ہیں اس حوالہ سے ایک جامع حکمت عملی ترتیب دینے کے لیئے پرنسپل سیکرٹری تمام یونیورسٹیوں کے ڈائریکٹر فنانس سے رابطہ کرینگے تاکہ صوبہ بھر کے لیئے اس مسئلہ کا ٹھوس حل نکالا جاسکے اسٹیٹ لائف اس حوالہ سے فری کنسلٹنسی فراہم کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں اسٹیٹ لائف کو صحت کارڈز کے حوالہ سے ادائیگیوں میں مشکلات پر وزیر خزانہ سے بات کرونگا چیئرمین اسٹیٹ لائف نے گورنر فیصل کریم کنڈی کی دلچسپی سے ڈیرہ اسماعیل خان میں قائم ہونے والے پہلے تکافل زون کی حوالہ سے بتایا کہ تکافل ذون بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کررہا ہے اور یہ زون پورے ملک کے لیئے ایک مثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا فوکس معاشی خوشحالی اور ملکی ترقی کی رفتار کو آگے بڑھانا ہے خلیجی ممالک میں مقیم افراد کے ساتھ رابطہ کاری کررہے ہیں ان کے لیئے اسٹیٹ لائف کے حوالہ خصوصی پالیسی روشناس کرائی جائے گی تاکہ ان کا بھی فایدہ ہو اور ملک کا بھی انہوں نے گورنر خیبر پختونخوا بننے پر فیصل کریم کنڈی کو مبارکباد پیش کی اور آئینی منصب پر انکی تعیناتی کو ملک وصوبہ کے لیئے خوش آئند قرار دیا۔

The federal government of Khyber Pakhtunkhwa has prepared the budget for the next 4 months

آئندہ مالی سال کا وفاقی بجٹ آج قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا

وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نئے مالی سال کا وفاقی بجٹ پیش کریں گے۔آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ کے  2024-25 اہم خدوخال بجٹ 2024-25 کا مجموعی حجم 18 ہزار ارب روپے ہو گا۔آئندہ مالی سال کے بجٹ میں دفاع کیلئے 2100 ارب روپے ، انفراسٹکچر کیلئے 827 ارب روپے ، توانائی کیلئے 253 ارب روپے، ٹرانسپورٹ اور مواصلات کیلئے 279 ارب روپے ، پانی کے منصوبوں کیلئے 206 ارب روپے ، سماجی شعبے کیلئے 280 ارب روپے، صحت کیلئے 45 ارب روپے ، تعلیم اور ہائر ایجوکیشن کیلئے 93 ارب روپے ،ایس ڈی جیز کیلئے 75 ارب روپے ، زراعت کیلئے 42 ارب روپے ، گورننس کیلئے 28 ارب روپے ،سائنس و آئی ٹی کیلئے 79 ارب روپے ،کے پی کے میں ضم شدہ اضلاع کیلئے 64 ارب ،آزادکشمیر و گلگت بلتستان کیلئے 75 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔

سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں15 فیصد تک اضافہ ،بجٹ میں سود اور قرضوں کی ادائیگیوں کی مد میں 9.5 ٹریلین کا تخمینہ،وفاقی ٹیکس ریونیو 12 ہزار 9 سو ارب،نان ٹیکس ریونیو کا ابتدائی تخمینہ 2100 ارب ،پیٹرولیم لیوی مد میں 1050 ارب روپے کا ہدف مقرر ہونے کا امکان ہو گا ۔نئے ملازمین کیلئے رضاکارانہ پنشن سسٹم متعارف کروانے کا امکان۔ریٹائر ملازمین کو تاحیات کی بجائے 20 سال تک پنشن دینے کی تجویز۔بجٹ میں پٹرولیم مصنوعات پر 5 فیصد سیلز ٹیکس عائد ہونے کا امکان ۔پٹرولیم پر جی ایس ٹی کی معیاری شرح میں ایک فیصد اضافہ بھی متوقع۔نئے بجٹ میں غیر ضروری ٹیکس چھوٹ ختم کئے  جانےکا امکان۔آئندہ مالی سال کے بجٹ میں دیگر ٹیکسز عائد کیے جانے کا امکان ۔ذرائع کے مطا بق آئندہ بجٹ میں سیلز ٹیکس کی شرح مزید ایک فیصد بڑھنے کا امکان ۔زرعی اشیا، بیجوں، کھاد، ٹریکٹر پر مکمل سیلز ٹیکس عائد ہونے کا امکان۔ خوراک، ادویات، اسٹیشنری پر 10 فیصد سیلز ٹیکس عائد ہونے کا امکان ہو گا ۔

Passports will not be issued to Pakistanis seeking political asylum abroad

بیرون ملک سیاسی پناہ لینے والے پاکستانیوں کو پاسپورٹ جاری نہ کرنے کا فیصلہ

بیرون ملک سیاسی پناہ لینے والے پاکستانیوں کو پاسپورٹ جاری نہیں ہوگا ۔قومی سلامتی کو مدنظر رکھتے ہوئےوزارت داخلہ نے دوسرے ممالک میں پناہ لینے والے پاکستانیوں  کو پاسپورٹ جاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ منگل کو اسلام آباد میں وزارت کی طرف سے جاری کردہ ایک نوٹیفکیشن کے مطابق ایسے تمام پاکستانی شہری جو دوسرے ممالک میں کسی بھی بنیاد پر سیاسی پناہ حاصل کریں گے وہ پاکستانی پاسپورٹ حاصل نہیں کر سکیں گے۔ ذرائع کے مطابق ایسے تمام پاکستانیوں کے پاسپورٹ منسوخ کر دیے جائیں گے اور ان کی تجدید بھی نہیں کی جائے گی۔ ڈائریکٹر جنرل پاسپورٹ نے اس حوالے سے باضابطہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔ وزارت داخلہ نے وزیر داخلہ محسن نقوی کی ہدایت پر نوٹیفکیشن جاری کیا۔ اس کی کاپیاں وزارت خارجہ اور دیگر تمام متعلقہ حکام کو بھی ارسال کر دی گئی ہیں۔